Eid Poetry & Eid Poem

Eid Poetry | Eid Poem

Eid Poetry is a list of collection of beautiful Eid Poems. Eid poems and poetry are for those people who want to wish happy Eid Ul Fitr 2022 to their friends, families and beloved. This post consists of 10 best Urdu Eid Poems in Urdu. Read Beautiful Eid Poetry & Eid Poem and share with your friends.

10 Best Eid Poems

1. Suna tha chand nikle ga | Eid Poetry & Eid Poem | عید مبارک شاعری

Eid Poetry | Eid Poem

سنا تھا چاند نکلے گا
سنا تھا عید آئے گی
سنا تھا ایک رونق کوچہ و بازار میں ہوگی
سنا تھا تم بھی آؤ گے
ہے چاند نکلا تھا سنا
سنا ہے رونقیں تھیں کوچہ و بازار میں ہر سو
سنا ہے عید کی خوشیاں منائیں شہر میں سب نے
یہ سب کچھ تو ہوا لیکن
بس اک تم ہی نہیں آئے
بتاؤ کیوں نہیں آئے
بتاؤ دید کب ہوگی
ہماری عید کب ہوگی


suna tha chand nikle ga
suna tha eid ay gi
suna tha aik ronaq
koocha bazar mein hogi
suna tha tum bhi ao ge
suna he chand nikla tha
suna he ronqen thin
koocha o bazar mein har su
suna he eid ki khushian
mnai shehr mein sab ne
ye sab kuch to hua laikn
bas ik tum hi nahin ay
kyin nahin ay btao
btao deed kab hogi
hmari eid kab hogi

2. Aj mein Eid mnaon to manon kese | Eid Poetry & Eid Poem
Eid Poetry | Eid Poem


آج میں عید مناؤں تو مناؤں کیسے
تجھ کو سینے سے لگاؤں تو لگاؤں کیسے
عید گاہ اب تو میں تنہا ہی نکل جاتا ہوں
ساتھ میں تجھ کو بھی لاؤں تو میں لاؤں کیسے
یاد آتا ہے تیرا انگلی پکڑ کر چلنا
ان جھرونکوں کو بھلاؤں تو بھلاؤں کیسے
تیرے ہم عمروں کی محفل ہی سے تو رونق تھی
محفلیں اب وہ سجاؤں تو سجاؤں کیسے
آج بھی ماں نے پکائی ہیں سوئیاں میٹھی
میں تجھے لا کے کھلاؤں تو کھلاؤں کیسے
چاند تو دیکھ لیا میں نے بہت صاف سا تھا
اپنے چندا کو دکھاؤں تو دکھاؤں کیسے
سال یہ بیت گیا راستہ تکتے تکتے
صبر اب ختم بتاؤں تو بتاؤں کیسے
مجھ کو معلوم ہے معصوم ہے مظلوم ہے تو
تجھ کو انصاف دلاؤں تو دلاؤں کیسے

Eid Poetry | Eid Poem in Hindi and Urdu


Aj mein eid mnaon to mnaon kese
tugh ko seene se lgaon to lgaon kese
eid gah ab to mein tanha hi nikal jata hun
sath mein tugh ko bhi laon to mein laon kese
yad ata he tera ungli pakr kar chalna
in jhironkon ko bhulaon to bhulaon kese
tere hum umron ki mehfil hi se to ronaq thi
mehfilen ab wo sjaon to sjaon kese
aj bhi maan ne pkai hein sewian meethi
mein tughe la ke khilaon to khilaon kese
chand tu ne dekh lia mein ne bohat saaf sa tha
apne chanda ko dikhaon to dikhaon kese
ye beet gya rasta takte takte saal
sabr khatm btaon to btaon kese
mugh ko maloom he masoom he mazloom he tu
tugh ko insaaf dilaon to dilaon kese

Also read our collection of Best Eid Poetry in Urdu 20 sher

3. Radio ne das baje shab ke khabr di Eid ki | Eid Poetry in Urdu
Eid Poetry | Eid Poem

ریڈیو نے دس بجے شب کے خبر دی عید کی
عالموں نے رات بھر اس نیوز کی تردید کی
ریڈیو کہتا تھا سن لو کل ہماری عید ہے
اور عالم کہتے تھے یہ غیر شرعی عید ہے
دو دھڑوں میں بٹ گئے تھے ملک کے سارے عوام
اس طرف سب مقتدی تھے اس طرف سارے امام
بیٹا کہتا تھا کہ کل شیطان روزہ رکھے گا
باپ بولا تیرا ابا جان روزہ رکھے گا
بیٹا کہتا تھا کہ میں سرکاری افسر ہوں جناب
روزہ رکھوں گا تو مجھ سے مانگا جائے گا جواب
باپ کہتا تھا کہ پھر یوں بام پر ایماں کے چڑھ
روزہ بھی رکھ اور روزے میں نماز عید پڑھ
آج کتنا فرق فل اسٹاپ اور کامے میں تھا
باپ کا روزہ تھا بیٹا عید کے جامے میں تھا

Eid Poetry | Eid Poem in Hindi and Urdu

Radio ne das baje shab ke khabr di eid ki
Alimon ne rat bhar us news ki tardeed ki
Radio kehta tha sun lo kal hmari eid he
Aur alim kehte the ye gher shari eid he
Do dharon mein bat gay thy mulk ke sare sare awam
Is tarf sab muqtadi us tarf sare imam
Beta kehta tha ke kal shetan roza rakhe ga
Bap bola tera abba jaan roza rakhe ga
Beta kehta tha mein sarkari afsar hun jnab
Roza rakhun ga to mugh se manga jay ga jwab
Bap kehta tha ke phir youn bam par iman ke char
Roza bhi rakh aur roze mein nmaz-e-eid par
Aj kitna farq full stop or comma mein tha
Bap ka roza tha beta eid ke jame mein tha

4. Kyun ashara he ufaq par | Eid Poetry in Urdu
Eid Poetry | Eid Poem

کیوں اشارہ ہے افق پر آج کس کی دید ہے
الوداع ماہ رمضاں وہ ہلال عید ہے
مسجدوں میں سب جمع ہو جائیں گے خورد و کلاں
دور ہو دل کی کدورت یہ سوال عید ہے
مسلموں کے سر جھکیں ہیں سجدۂ اللہ میں
کیا اخوت کا سبق ہے کیا کمال عید ہے
آج غربا بھی امیروں کے گلے مل جائیں گے
کچھ نہیں تفریق ہوگی یہ وصال عید ہے
ہے مسلمانوں پر واجب صدقۂ عیدالفطر
پا کے روزی خوش ہیں غربا یہ نہال عید ہے
زیب دیتا ہے لباس نو نئے انداز میں
تن بدن بھی ہے معطر یہ جمال عید ہے
عید آئی اور کیا کیا یاد تازہ کر گئی
سونچ بچھڑوں کی ہے دل میں اور خیال عید ہے

Kyun Ashara He Ufaq Par


kyun ashara he ufq par aj kis ki deed he
alwida ay mah-e-ramzan wo hlal-e-eid he
khurdo klan masjidon mein sab jama ho jayn ge
door ho dil ki kudoort ye swal-e-eid he
muslmanon ke sar jhuken hein sajda Allah mein
kia akhuwat ka sabq he kia kmal-e-eid he
aj ghurba bhi ameeron ke gale mil jayn ge
kuch nahin rafreeq hogi ye wisal-e-eid he
sadqa eid ul fite he muslmanon par wajib
pa ke rozi khush hein ghurba ye nhal-e-eid he
zeb deta he libas noa nay andaz mein
tab badn bhi he muatr ye jmal-e-eid he
eid ai aur kia kia yad taza kar gai
soonch bichron ki he dil mein aur khyal-e-eid he

5. Kitne adaab se maqtal ko sjaya gaya | Eid Poetry in Urdu
Eid Poetry | Eid Poem

کتنے آداب سے مقتل کو سجایا گیا ہے
پھر تری بزم سے زندوں کو اٹھایا گیا ہے
سچ کسی جھوٹ کی تخلیق نہیں کر سکتا
جانے کیا ہے جو سلیقے سے چھپایا گیا ہے
اس سے بڑھ کر نہیں ہو سکتی فنا کی تصویر
ایسی حکمت سے کھلونے کو بنایا گیا ہے
عید قرباں سے مقدس نہیں کوئی تقریب
اس طرح بھولا سبق یاد دلایا گیا ہے
اس طرح خواب سے ملتی نہیں کوئی تعبیر
جیسے صحرا میں سمندر کو بلایا گیا ہے
جانے یہ کس نے بنائی ہے قیامت کی شبیہ
صرف الزام مصور پہ لگایا گیا ہے
اور پختہ ہوئی جنت کی بشارت خورشیدؔ
جس طرح مٹی میں مٹی کو ملایا گیا ہے


Eid Poetry | Eid Poem in Hindi and Urdu


kitne adaab se maqtl ko sjaya gia
phir teri bazm se zindon ko uthaya gia he
sach kisi jhoot ki takhleeq nahin kar sakta
jane kia he ho saleeqe se chupaya gia he
is se barh kar nahin ho sakti fna ki tasveer
aisi hikmt se khilone ko bnaya gya he
eid qurban se tqadus nahin koi taqreeb
is trah bhoola hua sabq yad dilaya gia he
is trah khwab se milti nahin koi tadbeer
jese sehra mein samundar ko bulaya gia he
jane ye kis ne bnai he qiamat ki shabih
sirf ilzam musawar pe lgaya gia he
aur pukhta hoi jannat ki basharat ‘Khursheed’
jis trah mati mein mati ko milaya gia he

6. Gaon mein eid phira karti thi galia galia | Eid Sad Poetry
Eid Poetry | Eid Poem

گاؤں میں عید پھرا کرتی تھی گلیاں گلیاں
اور اس شہر میں تھک کر یوں ہی سو جاتی ہے
پہلے ہنستی تھی ہنساتی تھی کھلاتی تھی مجھے
اب تو وہ پاس بھی آتی ہے تو رو جاتی ہے
کتنی مستانہ سی تھی عید مرے بچپن کی
اب خیالوں میں بھی لاتا ہوں تو کھو جاتی ہے
ہم کبھی عید مناتے تھے منانے کی طرح
اب تو بس وقت گزرتا ہے تو ہو جاتی ہے
ہم بڑے ہوتے گئے عید کا بچپن نہ گیا
یہ تو بچوں کی ہے بچوں ہی کی ہو جاتی ہے


Gaon Mein Eid Phira Karti Thi


gaon mein eid phira karti thi galian gallian
aur is shehr mein thak kar youn hi so jati he
pehle hansti thi hansati thi khilati thi mughe
ab to wo pas bhi ati he to ro jati he
kitni mastana see thi eid mere bachpan ki
ab khyalon mein bhi lata hun to kho jati he
hum kabhi eid mnate the mnane ki trah
ab to bas waqt guzrta he to ho jati he
hum bare hote gay eid ka bachpan na gia
ye to bachon ki he bachon hi ki ho jati he

7. Phooti lab-e-nazuk se wo ik shokh see lali | Romantic eid Poetry
Eid Poetry | Eid Poem

پھوٹی لب نازک سے وہ اک شوخ سی لالی
تھوڑی سی شفق عارض تاباں نے چرا لی
پھر بام کی جانب اٹھے ابروئے ہلالی
اور چاند نے شرما کے کہا عید مبارک
چھیڑا وہ حسیں شب نے تمناؤں کا جادو
لہرا گئی خلوت کدۂ ناز میں خوشبو
ہولے سے سنورنے لگے احساس کے گیسو
دی کس نے در دل پہ صدا عید مبارک
جھلکا رخ روشن پہ حسیں صبح کا پرتو
گلنار ہتھیلی پہ حنا دینے لگی لو
زلفوں سے چلی نکہت وارفتہ کی اک رو
پیغام لیے آئی صبا عید مبارک
سکھیوں نے خیالوں کے حسیں رنگ ابھارے
جاگے کئی خوابیدہ سے جذبات کے دھارے
پھوٹے وہ نگاہوں سے تبسم کے پھوارے
ماحول ہوا نغمہ نوا عید مبارک
صدقے ترے اے روح ادا پیک لطافت
خوش آئے ترے حسن کو یہ کیف کی ساعت
یہ تحفۂ اشعار ہے نذرانۂ الفت
اے جان حیا جان وفا عید مبارک


Phooti Lab Nazuk Se


Phooti lab nazuk se wo ik shokh se lali
thori see shafq ariz taban be chura li
phir bam ki janab uthe abroy hlali
aur chand ne sharma ke kaha eid mubarak
chera wo haseen shab ne tmanaon ka jado
lehra gai khalwat kada naz mein khushbu
hole se snwarne lage ahsas ke gesu
di kis ne dar dil pe sada eid mubarak
jhalka rukh roshn pe haseen subha ka par tu
gulnar hatheli py hina dene lagi lu
zulfon ses chali nikhat warafta ki ik ru
pegham lie ai saba eid mubarak
sakhyon ne khyalon ke haseen rang ubhare
jage kai khwabeeda se jazbat ke dhare
phoote wo nigahon se tbassum ke phware
mahol hua naghma nwa eid mubarak
sadqe tere ay rooj ada pek ltafat
khush ay tere haseen ko ye kef sa’at
ye tohfa ashaar he nazrana ulfat
ay jan haya jan wafa eid mubarak

8. Apni ankhon mein kahmstan me nab liye | Eid Sad Poetry | عید شاعری
Eid Poetry | Eid Poem

اپنی آنکھوں میں خمستان مے ناب لیے
اپنے عارض پہ بہار گل شاداب لیے
اپنے ماتھے پہ درخشانیٔ مہتاب لئے
نکہت و رنگ لیے نور کا سیلاب لیے
عید آئی ہے محبت کا نیا باب لیے
زلف بکھری ہے کہ رحمت کی گھٹا چھائی ہے
جس طرف دیکھیے رعنائی ہی رعنائی ہے
رہ گزر کاہکشاں بن کے نکھر آئی ہے
ذرہ ذرہ ہے جمال در خوش آب لیے
عید آئی ہے محبت کا نیا باب لیے
خارزاروں پہ گلستاں کا گماں ہے امروز
شکوۂ جور کسی لب پہ کہاں ہے امروز
ملتفت چشم حسینان جہاں ہے امروز
کتنے تسلیم لیے کتنے ہی آداب لیے
عید آئی ہے محبت کا نیا باب لیے
کس قدر رحمت ساقی ازل عام ہے آج
رقص پیمانہ لیے گردش ایام ہے آج
بادۂ کیف سے لبریز ہر اک جام ہے آج
عشرت روح و سکون دل بے تاب لیے
عید آئی ہے محبت کا نیا باب لیے
دوش گیتی پہ پریشاں ہوئی پھر زلف شمیم
لڑکھڑاتی ہوئی پھرتی ہے گلستاں میں نسیم
پھر زمیں بن گئی غیرت دہ گل زار نعیم
خاک ہے تختۂ گل بستر سنجاب لیے
عید آئی ہے محبت کا نیا باب لیے
زندگی رنج و الم بھول گئی ہے اے دوست
محفل زیست بصد شوق سجی ہے اے دوست
عشق بیگانۂ آشفتہ سری ہے اے دوست
حسن ہے پیرہن اطلس و کمخواب لیے
عید آئی ہے محبت کا نیا باب لیے
درد ہستی کی دوا کر لیں خلوص دل سے
آؤ اک فرض ادا کر لیں خلوص دل سے
آؤ تجدید وفا کر لیں خلوص دل سے
جذبہ و شوق ہم آہنگیٔ احباب لیے
عید آئی ہے محبت کا نیا باب لیے


Eid Poem in Hindi | Urdu Hindi Poetry


Apni ankhon mein khamstan may nab liye
apne ariz pe bhar gul shadab liye
apne mathe pe darkhshani mehtab liye
nikhat o rang liye noor ka selab liye
eid ai he mahabat ka naya bab liye
zulf bikhri he ke rehmat ki ghta chai he
jis tarf dekhie ranai hi ranai he
wo guzr kahkshan ban ke nikhr ai he
zra zra he jmal dar khush aab liye
eid he mahabat ka naya baab liye
kharzaron pe gulistan ka guman he imroz
shikwa jor kisi lab pe khan he imroz
multfat chashm haseenan jhan he imroz
kitne tasleem liye kitne hi adaab liye

Eid ai he mahabat ka naya bab liye

kis qadr rehmat saqi azl aam he aaj
raqse pemana liye gardish ayam he aaj
bada kaif se librez har ik jaam he aaj
ishrat rooh o sakoon dil be tab liye
eid ai he mahabat ka naya baab liye
dosh geeti py preshan hoi phir zulf shameem
larkhrati hoi phirti he gulistan mein naseem
phir zameen bhi ban gai ghert dah gulzaar naeem
khak he takhta gul bistr sanjab liye
eid ai he mahabat ka naya baab liye
zindagi ranj-o-alm bhool gai he ay dost
mehfil zeest basad shoq saji he y dost
ishq begana ashufta sari he ay dost
husan he perhan atlas-o-kamkhwab liye
eid ai he mahabat ka naya baab liye
dar-e-dil ki dua kar len khuloos-e-dil se
ao ik farz ada kar len khuloos-e-dil se
ao tajdeed-e-wafa kr len khuloos-e-dil se
jazba o shoq ham ahangi ahbaab liye
eid ai he mahabat ka naya baab liye

Read Eid Sad Poetry in Urdu عید کے موقع پر اپنوں کو یاد کرنے کے لیے عید کے دس بہترین اشعار پڑھیں۔

9. Zar dar nmazi eid ke din | Eid Sad Poetry | عید شاعری
Eid Poetry | Eid Poem

زردار نمازی عید کے دن کپڑوں میں چمکتے جاتے ہیں
نادار مسلماں مسجد میں جاتے بھی ہوئی شرماتے ہیں
ملبوس پریشاں دل غمگیں افلاس کے نشتر کھاتے ہیں
مسجد کے فرشتے انساں کو انسان سے کمتر پاتے ہیں
قرآں سے دھواں سا اٹھتا ہے ایمان کا سر جھک جاتا ہے
تسبیح سے اٹھتے ہیں شعلے سجدوں کو پسینہ آتا ہے
وہ واسطہ جس کو فاقوں روزے روزے بے بیچارہ کیا رکھے
دن دیکھ چکا شب دیکھ چکا قسمت کا سہارا کیا رکھے
خالی ہوں لہو سے جس کی رگیں وہ دل کا شرارہ کیا رکھے

ایمان کی لذت دیں کا بھرم افلاس کا مارا کیا رکھے

تاریک دکھائی دیتی ہے دنیا یہ مہ و خورشید اسے
روزی کا سہارا ہو جس دن وہ روز ہے روز عید اسے
اک مادر مفلس عید کے دن بچوں کو لئے بہلاتی ہے
سر ان کا کبھی سہلاتی ہے نرمی سے کبھی سمجھاتی ہے
قسمت پہ کبھی جھنجھلاتی ہے جینے سے کبھی تنگ آتی ہے
زردار پڑوسن خوش ہو کر سب دیکھتی ہے اور کھاتی ہے
پیسے کا پجاری دنیاں میں سچ پوچھو تو انساں ہو نہ سکا
دولت کبھی ایماں لا نہ سکی سرمایہ مسلماں ہو نہ سکا
نوخیز دلہن اور عید کا دن کپڑوں سے نمایاں بد حالی
کمہلائے ہوئے سے غنچے تر مرجھائی ہوئی سی ہریالی
سوکھا ہوا چہرہ غربت سے اتری ہوئی ہونٹوں کی لالی
مایوس نظر ٹوٹا ہوا دل اور ہاتھ بھی پیسے سے خالی
شوہر کی نظر حسرت سے بھری اٹھتی ہے تو خود جھک جاتی ہے
احساس محبت کی دنیاں اس منظر سے تھراتی ہے
خوں چوس رہا ہے پودوں کا اک پھول جو خنداں ہوتا ہے
پامال بنا کر سبزوں کو اک سرو خراما ہوتا ہے
چربی مل کر انسانوں کی اک چہرہ درخشاں ہوتا ہے
یہ عید کے جلوے بنتے ہیں جب خون غریباں ہوتا ہے
مفلس کی جوانی عید کے دن جب صبح سے آہیں بھرتی ہے
دنیا یہ امیروں کی دنیا تب عید کی خوشیاں کرتی ہے


Eid Poetry | Eid Poem in Urdu and Hindi

Zardaar nmazi eid ke din kapron mein chamkte jate hein
nadaar muslman masjid mein jate bhi hue sharmate hein
Malboos preshan dil ghamgeen aflas ke nishtr khate hein
masjid ke frishte insan ko insan se kamtr pate hein
quran se dhuan sa uthta he iman ka sar jhuk jata he
tasbeeh se uthte hein shoaley sajdon ko paseena ata he
wo wasta jis ko faqon roze roze be chara kia rakhe
din dekh chuka shab dekh chuka qismat ka shara kia dekhe
khali hun laho se jis ki ragen wo dil ka shrara kia rakhe

Iman ki lazt deen ka bharm aflas ka mara kia rakhe

tareek dikhai deti he dunia ye mah o khursheed use
rozi ka shara ho jis din wo roza he roz eid usey
ik nadir-e-muflis eid ke din bachon ko liye behlati he
sar un ka kabhi sehlati he narmi se kabhi smjhati he
qismat pe kabhi jhunjhlati he jene se kabhi tang ati he
zardaar parosan khush ho kar sab dekhti he aur khati he
pese ka pujari dunia mein sach pocho to insan ho na saka
dolat kabhi iman la na saki sarmaya muslman ho na saka
no khez dulhan aur eid ka din kapron se numayan badhali
kamlaye hue se ghunche tar murjhai hoi se haryali
sookha hua chehra ghurbat se utri hoi honton ki lali
mayoos nazar toota hua dil aur hath bhi pese se khali
shohr ki nazr hasrat se bhari uthti he to khud chamk jati he
ahsas mahabat ki dunya is manzir se thraati he
khoon choos raha he podon ka ik phool jo khanda hota he
pamaal bna kar sabzon ko ik suru khrama hota he
charbi mil kar insanon ki ik chehra darkhsan hota he
ye eid ke jalwe bante hein jab khoon ghareeban hota he
muflis ki jwani eid ke din jab subha se ahen bharti he
dunia ye ameeron ki dunia tab eid ki khushia karti he

Read John Elia Sad Poetry and Ahmad Faraz Best Poetry

10. Sabhi ne eid mnai mere gulsitan mein | Eid Mubarak Poetry | اردو شاعری

Eid Poetry | Eid Poem

سبھی نے عید منائی مرے گلستاں میں
کسی نے پھول پروئے کسی نے خار چنے
بنام اذن تکلم بنام جبر سکوت
کسی نے ہونٹ چبائے کسی نے گیت بنے
بڑے غضب کا گلستاں میں جشن عید ہوا
کہیں تو بجلیاں کوندیں کہیں چنار جلے
کہیں کہیں کوئی فانوس بھی نظر آیا
بطور خاص مگر قلب داغ دار جلے
عجب تھی عید خمستاں عجب تھا رنگ نشاط
کسی نے بادہ و ساغر کسی نے اشک پئے
کسی نے اطلس و کمخواب کی قبا پہنی
کسی نے چاک گریباں کسی نے زخم سیے
ہمارے ذوق نظارہ کو عید دن بھی
کہیں پہ سایۂ ظلمت کہیں پہ نور ملا
کسی نے دیدہ و دل کے کنول کھلے پائے
کسی کو ساغر احساس چکنا چور ملا
بہ فیض عید بھی پیدا ہوئی نہ یک رنگی
کوئی ملول کوئی غم سے بے نیاز رہا
بڑا غضب ہے خدا وند کوثر و تسنیم
کہ روز عید بھی طبقوں کا امتیاز رہا

Eid Poetry | Eid Poem in Hindi and Urdu


sabhi ne eid mnai mere gulistan mein
kisi ne phool proy kisi ne khar chune
bnam izn tkallum bnam jabr sakoot
kisi ne hont chbay kisi ne geet bune
jashne eid hua bare ghazb ka gulistan mein
kahin to bijlyan koondin kahin chanar jale
kahin kahin koi fanoos bhi nazr aya
bator khas magr qalg ke daghdar jale
ajb thi eid khamstan ajb tha rang nishat
kisi ne bada o saghr kisi ne ashk piye
kisi ne atlas o kamkhwab ki qaba pehni
kisi ne chake griban kisi na zakhm siye
hmare zoq nzara ko eid ke din bhi
kahin pe saya zulmat kahin pe noor mila
kisi ne deeda o dil ko kanwal khule pay
kisi ko saghr ahsas chakna choor mila
yak rangi ba faiz eid bhi peda hoi na
koi malool koi gham se be niaz raha
bara ghazb ge khuda wand kosr o tasneem
ke roz eid bhi tabqon ka imtiaz raha

Eid Ul Fitr is the greatest occasion to meet your friends and relatives. Eil Ul Fitr brings happiness for every person. Penpowerr.com is happy to share the best Eid Poetry and Poems with you. Share our collection with your friends. But before sharing, don’t forget to tell us in the comment about your favourite Eid poem in Urdu.

Leave a Reply

Your email address will not be published.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.